X

ساہیوال واقعے میں غفلت کا مظاہرہ کیا تو کیا ہو گا معروف صحافی نے خوفناک انکشاف کر دیا

رپورٹ کارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے حسن نثار نے کہا کہ سانحہ ساہیوال پورے ملک کے حالات کاخلاصہ ہے ، اگر اس معاملے میں ٹمپرنگ کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کا نتیجہ اچھا نہیں نکلے گا ، اس لئے متعلقہ لوگوں کو چاہئے کہ اس معاملے کو پوری سنجیدگی سے دیکھا جائے ، اگر یہ معاملہ اپنے منطقی نتیجے تک نہ پہنچا تو بہت خطر ناک ہوگا ۔ 0:00/0:00 انہوں نے کہا کہ اعتزاز احسن نے کہا تھا کہ ریاست ہوگی ماں کے جیسی جس پر میں نے کہا تھا کہ ریاست بڑی خبیث ماں کے جیسی ہوگی اور سوتیلی ماں کے جیسی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ میں تنبیہ کررہاہوں کہ اس کا ردعمل بہت خوفناک ہوگا ، عوام پر نہیں تو اپنے آپ ہی رحم کرلو، عوام کا ردعمل آیا تو معاملہ ہاتھ سے نکل جائیگا

وزیر اعظم قطر پہنچے تو کیا ہوا جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

وزیراعظم عمران خان2روزہ دورے پر قطر پہنچ گئے۔ خارجہ امورکےوزیرمملکت سلطان بن سعدنےوزیراعظم کااستقبال کیا،دوحہ کی سڑکوں کو پاکستانی اور قطری پرچموں سے سجا دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان 2 روزہ سرکاری دورے پر قطر پہنچ چکے ہیں۔اس موقع پر وفاقی وزراء شاہ محمودقریشی،اسدعمراورغلام سروربھی وزیراعظم کے ہمراہ ہیں۔ مشیرتجارت عبدالرزاق داؤداورمعاون خصوصی ذوالفقاربخاری بھی ہمراہ ہیں۔وزیراعظم عمران خان امیرقطرکی دعوت پرقطرکادورہ کررہےہیں۔اس دورے میں وزیراعظم عمران خان امیرقطرشیخ تمیم بن حمدالثانی سےملاقات کریں گے۔وزیراعظم کاروباری شخصیات اورپاکستانی کمیونٹی سےبھی ملاقاتیں کریں گے

گھروں میں گیس کے بل میں اتنا اضافہ عوام تبدیلی سے پناہ مانگنے لگے

جعلی اکاونٹ کیس میں بڑی پیشرفت دبنگ ادارے نے اہم قدم اٹھا لیا

چیئرمین نیب نے جعلی اکاؤنٹس کیس نیب راولپنڈی کے حوالے کر دیا۔ پاناما جے آئی ٹی کے رکن عرفان نعیم منگی آصف زرداری، فریال تالپور، بلاول بھٹو اور مراد علی شاہ کیخلاف تحقیقات کریں گے۔ نیب کی جانب سے 16 ریفرنس دائر کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔ قومی احتساب بیورو کے ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین جاوید اقبال کی ہدایت پر جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات نیب راولپنڈی کے سپرد کی گئی ہیں۔ بطور ڈی جی عرفان نعیم منگی اس سارے سکینڈل کی تحقیقات کریں گے جس کے بعد جڑواں شہروں کی احتساب عدالتوں میں ریفرنسز دائر کئے جائیں گے

پروسی ملک کے 126 فوجی مارے گئے اچانک بڑی خبر آگئی

کابل(ویب ڈیسک)طالبان کی جانب سے کیے گئے ایک حملے میں افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس کے 126 اہلکار ہلاک ہوگئے۔ افغان وزارت دفاع کے سینئر عہدیدار کے مطابق طالبان کی جانب سے افغان صوبے میدان وردک میں قائم این ڈی ایس کے کمپاﺅنڈ کو نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ کمپاﺅنڈ میں ہونے والے دھماکے میں 126 اہلکار ہلاک ہوئے ہیں جن میں 8 سپیشل کمانڈوز بھی شامل ہیں۔ سکیورٹی آفیشل نے بتایا کہ پیر کی صبح حملہ آوروں نے بارود سے بھری گاڑی میدان شہر میں واقع این ڈی ایس کے ٹریننگ سنٹر سے ٹکرا ئی۔ جیسے ہی دھماکہ ہوا تو 2 مسلح افراد ٹریننگ سنٹر کے اندر داخل ہوگئے اور اس سے پہلے کہ جوابی کارروائی کی جاتی انہوں نے کئی فوجیوں کو ڈھیر کردیا

سی ٹی ڈی نے زندہ بچنے والے بچوں کے ساتھ کیا خوفناک سلوک کیا

ایلیٹ فورس کی موبائل زندہ بچ جانے والے بچوں کو پہلے ساتھ لے گئی، پھر پٹرول پمپ پر چھوڑ دیا، کچھ دیر بعد واپس آ کر تینوں بچوں کو ہسپتال پہنچایا۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اہلکاروں نے گاڑی کو روکا اور فائرنگ کر دی جبکہ گاڑی کے اندر سے کوئی مزاحمت نہیں کی گئی۔ ڈی سی ساہیوال نے بھی تصدیق کی کہ کار سواروں نے کو ئی مزاحمت نہیں کی۔ عینی شاہدین نے مزید بتایا کہ گاڑی میں کپڑوں سے بھرے 3 بیگز بھی موجود تھے جنہیں پولیس اپنے ساتھ لے گئی۔ زخمی بچے عمر خلیل نے میڈیا کو بتایا کہ وہ گاڑی میں سوار ہو کر چچا کی شادی میں شرکت کے لیے بورے والا گاؤں جا رہے تھے۔ اس کے والد نے پولیس والوں سے کہا کہ پیسے لے لو، ہمیں معاف کر دو لیکن انہوں نے فائرنگ کر دی۔ دوسری جانب وزیراعظم کے حکم پر سانحے میں ملوث تمام پولیس اہلکاروں کو گرفتار کیا جا چکا ہے، جبکہ تشکیل دی گئی جے آئی ٹی کی جانب سے معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں، امکان ہے کہ واقعے کی رپورٹ اگلے 24 گھنٹے میں جاری کر دی جائے گی

زرداری مہرین شاہ نامی خاتون کے ساتھ کیا کرتے رہے بڑے ایکشن کی تیاری

سابق صدر آصف علی زرداری کیخلاف نا اہلی درخواست تیار کر لی گئی ہے ، پیپلز پارٹی کے شریک چیئر مین کی نا اہلی کے لئے سپریم کورٹ میں دائر کر نے کا فیصلہ کر لیا ہے، درخواست میں آرٹیکل 62 عن اید کے تحت تاحیات نا اہلی کی استدعا کی جائے گی۔ درخواست پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار کی جانب سے دائر کی گئی جبکہ درخواست میں کہا کیا ہے کہ آصف زرداری نے بیرون ملک کروڑوں روپے کے اثاثے چھپائے اس کے ساتھ ہی آصف علی زرداری کے نام بیرون ملک خفیہ اثاثے بھی منظر عام پر آگئے ہیں۔ آصف زرداری کے نام پر نیویارک کے پوش علاقے میں پارکنگ لاٹ کا انکشاف ہوا ہے،جس کی مالیت کروڑوں روپے ہے جسے آج تک چھپایا گیا۔ یکم جنوری2019 سے پارکنگ لاٹ کے ٹیکس کی رسیدیں مل گئیں۔ بیرون ملک بے نام جائیدادوں کے گڑبڑ گھو ٹالے میں انور مجید کے بعد مہرین شاہ نامی خاتون کا نام بھی سامنے آگیا ہے۔نیو یارک مین ہیٹن اپرایسٹ میں 5 لاکھ 30ہزار ڈالر کی مالیت کے اپارٹمنٹ کی تفصیلات شامل ہیں، جبکہ پی ٹی آئی نے دعویٰ کیا ہے کہ پارکنگ لاٹ کی ڈیل کیلئے مہرین شاہ کو پاور آف اٹارنی دی گئی۔پاور آف اٹارنی کی خفیہ دستاویزات بھی درخواست کا حصہ بنائی گئی ہیں

سی ٹی ڈی کی تازہ ترین کاروائی ذیشان کے 2 ساتھی ہلاک

سب کی نظریں ساہیوال حادثے پر مگر تحریک لبیک کے حوالے سے بڑی خبر

صوبہ بھر کی جیلوں میں نظر بند تحریک لبیک کے گرفتار عہدیداران اور کارکنوں کو آئندہ 24 گھنٹوں میں رہا کئے جانے کا امکان،حکومت نے 16 ایم پی او کے تحت سرگودھا سمیت صوبہ بھر سے 2100 سے زائد کارکنوں کو گرفتار کیا تھا۔ذرائع کے مطابق حکومت پنجاب نے فیصلہ کیا ہے کہ نظر بند کئے جانے والے تحریک لیبک کے تمام عہدیداران اور کارکنان کو آئندہ 24 گھنٹے میں رہا کر دیا جائے ،جس کیلئے ہوم ڈیپارٹمنٹ پنجاب سمیت دیگر تمام اداروں سے بھی مشاورت کر لی گئی ہے،تحریک لبیک پاکستان کی جانب سے حکومت مخالف دھرنوں اور جلاؤ گہراؤ کیساتھ ساتھ عدلیہ اور ریاست کیخلاف غلط زبان استعمال کرنے اور املاک کو نقصان اور گاڑیوں کو بھی جلایا گیا تھا جس پر حکومت نے چیئرمین خادم حسین رضوی سمیت دیگر اہم عہدیداران اور کارکنان کونظر بند کر لیا تھا

ساہیوال واقعے میں جے آئی ٹی کی حقیقت کیا ہے چونکا دینے والے انکشافات

سینئر صحافی اور تجزیہ کار راؤف کلاسرا نے کہا ہے کہ جن محکموں کے اہلکاروں نے قتل کیا،انہی کے افسران پر مشتمل جے آئی ٹی بنا دی گئی، وہی جج وہی جیوری اور وہی جلاد! واقعے کی جوڈیشل انکوائری ہونی چاہیے تھی۔ راؤف کلاسرا نے ٹویٹر پر ساہیوال واقعے کی تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی پر اپنے ردعمل میں کہا کہ جو سرکاری محمکے ساہیوال میں قتل عام میں ملوث ہیں اب انہی اداروں کے افسران پرمشتمل جے ائی ٹی بنا کر انکوائری کا کام سونپ دیا گیا ہے۔ انکوائری سپریم کورٹ کے جج سے کرانی چائیے تھی نہ کہ جنہوں نے قتل عام کیا اب اسی محکمے کے افسران فیصلہ بھی کریں؟ وہی جج، وہی جیوری اور وہی جلاد؟ جو سرکاری محمکے ساہیوال میں قتل عام میں ملوث ہیں اب انہی اداروں کے افسران پرمشتمل جے ائی ٹی بنا کر انکوائری کا کام سونپ دیا گیا ہے۔ انکوائری سپریم کورٹ کے جج سے کرانی چائیے تھی نہ کہ جنہوں نے قتل عام کیا اب اسی محکمے کے افسران فیصلہ بھی کریں۔واضح رہے گزشتہ روز ساہیوال کے قریب لاہور سے جاتے ہوئے سی ٹی ڈی نے اپنی کاروائی کے دوران ایک 13سالہ بچی اورخاتون سمیت 4 افراد کو اندھا دھند فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔ اور ہولناک واقعے میں معصوم بچوں کو زخمی بھی کیا گیا۔ سی سی ٹی وی فوٹیج، عینی شاہدین کے بیانات اور ڈی سی ساہیوال کی ابتدائی تحقیقات سے واضح ہوجاتا ہے کہ سی ٹی ڈی نے بغیرتصدیق کاروائی کی، اور اندھا دھند فائرنگ کردی۔ اگر گاڑی میں کوئی دہشتگردملزم تھا تواس کو روک کرگرفتار کرتے ، نہ کہ بلااشتعال فائرنگ کرکے قتل کردیتے۔تاہم وزیرا عظم عمران خان کی ہدایات کی روشنی میں وزیراعلیٰ پنجاب نے جے آئی ٹی تشکیل دے دی ہے اور سی ٹی ڈی کے 16اہلکاروں کو گرفتار کرکے تھانہ یوسف والا میں مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے۔جے آئی ٹی اپنی تحقیقاتی رپورٹ تین روز میں وزیراعلیٰ کو پیش کرے گا