ابھی ممتاز قادری کو پھانسی میں ایک دن رہ گیا تھا – کیپٹن صفدر نے ایسا کیا کیا تھا ؟ – آپ پر حیرت کے پہاڑ ٹوٹ پڑیں گے


ابھی ممتاز قادری کو پھانسی میں ایک دن رہ گیا تھا -   کیپٹن صفدر  نے ایسا  کیا   کیا تھا ؟ - آپ پر حیرت کے پہاڑ ٹوٹ پڑیں گےاسلام آباد(ویب ڈیسک) معید پیرزادہ کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے حامد میر نے بتا یا کہ ممتاز قادری کی پھانسی سے کچھ دن قبل میں پارلیمنٹ ہاوس کی مسجد سے جمعے کی نماز پڑھ کر باہر نکلا اور چیئر مین سینٹ کے دفتر کی طرف چلنا شروع کردیا ۔اسی دوران پیچھے سے ایک شخص کی چلانے کی آواز آئی جو مجھے مخاطب کرتے ہوئے کہہ رہا تھا کچھ کرو اور ممتاز قادری کی پھانسی کو روکو – میں نے پیچھے مڑ کر دیکھا تو سامنے نواز شریف کے داماد کیپٹن صفدر کھڑے تھے جنہوں نے ایک بار پھر چلاتے ہوئے مجھے کہا کہ اس پھانسی کو روکو جس پر میں نے کہا کہ میں تو ایک عام سا صحافی ہوں میں کیا کر سکتا ہوں ؟آپ نواز شریف سے بات کریں ۔ حامد میر نے بتا یا کہ اس کے بعد کیپٹن صفدر نے میرے کندھے زور سے جھنجھوڑتے ہوئے کہا کہ اگر ممتاز قادری کو پھانسی ہو گئی تو ہم سب ذلیل ہو جائیں گے