تمام بموں کا باپ تیار کرلو – اس ملک پر اب حملہ کرنا ہے – جان کر آپ کی پریشانی کی انتہا نہ رہے گی

واشنگٹن(ویب ڈیسک)گزشتہ سال امریکا نے افغانستان میں تمام بموں کی ماں نامی بم گرا کر ساری دنیا کو پریشان کر دیا اور اب تمام بموں کا باپ بھی سامنے آ گیا ہے جسے شمالی کوریا پر گرانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔ تمام بموں کی ماں جس کا تکنیکی نام میسو آرڈیننس ائیربلاسٹ ہے، گزشتہ سال اپریل کے مہینے میں افغانستان میں واقع داعش کی سرنگوں پر گرایا گیا تھا۔ انسانی تاریخ میں پہلی بار 18000 پاﺅنڈ وزنی بم میدان جنگ میں استعمال کیا گیا تھا اور یہ سب سے بڑا غیر جوہری بم بھی تھا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اب امریکہ نے اس سے بھی بڑا بم GBU-57 میسو آرڈیننس پینیٹریٹر MOP تیار کرلیا ہے جسے تمام بموں کا باپ کا نام دیا گیا ہے۔ اس بم میں 30 ہزار پاﺅنڈ بارود بھراگیا ہے، یعنی اس کا مجموعی وزن دو بڑے افریقی ہاتھیوں سے بھی زیادہ ہے۔
رپورٹ کے مطابق امریکہ نے ابتدائی طور پر یہ بم ایران کی زیر زمین جوہری تنصیبات کو تباہ کرنے کے لئے تیار کیا تھا۔ دفاعی تجزیہ کار مائیکل کلیئر کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کے ساتھ بڑھتی ہوئی کشیدگی کے باعث امریکہ نے اپنا ارادہ تبدیل کیا ہے اور اب اس بم کو شمالی کوریا پر گرانے کی تیاری کی جارہی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ امریکہ کا ہدف شمالی کوریا کے زیر زمین جوہری اسلحہ خانے ہوں گے اور اس حملے کا بنیادی مقصد شمالی کوریا کی جوہری میزائل صلاحیت کا خاتمہ کرنا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ امریکہ کے مشیر برائے قومی سلامتی ایچ آر میک ماسٹر شمالی کوریا پر حملے کی کھل کر حمایت کررہے ہیں۔ گزشتہ ماہ امریکی ائیرفورس کے تین B-2 سٹیلتھ بمبار طیارے بھی گوام کی اینڈرسن ائیرفورس بیس پر بھیجے جاچکے ہیں۔ امریکی فضائیہ میں B-2 سٹیلتھ بمبار طیارے وہ واحد طیارے ہیں جو 30 ہزار پاﺅنڈ وزنی بم لیجانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ دفاعی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ان بمبار طیاروں کو گوام ائیربیس پر منتقل کرنے کا مقصد اس کے سوا کیا ہو سکتا ہے کہ انہیں 30 ہزار پاﺅنڈ وزنی بم گرانے کے لئے استعمال کیا جائے گا