ہم کبھی کامیاب نہیں ہو سکتے – بھارتی آرمی چیف نے اپنی ہی حکومت کے منہ پر – کالک مل دینے والا بیان جاری کر دیا

سرینگر(ویب ڈیسک)بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت نے اعتراف کیاہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہوسکتی۔وادی کے حالات بہتر کرنے کا طریقہ صرف امن ہی ہے ۔ مجاہدین بھی اپنا مقصد حاصل نہیں کرسکتے ۔مقبوضہ کشمیر میں لائٹ انفینٹری کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وادی کے انتہاپسند نوجوانوں کو جلد احساس ہوجائے گا کہ بندوق کسی مسئلے کاحل نہیں۔ یہ کہنا غلط ہے کہ وادی میں صورت حال قابو سے باہر ہو گئی ہے ، یہ صورت حال بھی اتنی خراب نہیں ہوئی۔ ہمیں مل کر امن کے لیے کوئی راستہ تلاش کرناہو گا اورہم اس میں کامیاب ہو جائیں گے ۔ اس کے لیے ہم کو مل کر بیٹھنا، کام کرنا اور محنت کرناہو گی۔ وادی کے زیادہ تر لوگ امن چاہتے ہیں اور ان کا یقین ہے کہ وہ بھارتی ہیں۔ کشمیریات کا تصور واپس لانے کی ضرورت ہے ۔ دوسری طرف چیئرمین اے پی ایم ایل جنرل ریٹائرڈپرویز مشرف نے کہا کہ کشمیر ہماری رگوں میں دوڑتا ہے کشمیری میری جان ہیں ، خواہش ہے کہ پاکستان میں کوئی ایسی… حکومت آئے جو غاصب بھارت کو سبق سکھا ئے اور اینٹ کا جواب پتھر سے دے ،کشمیریوں کی خوشحالی،سلامتی ،آزادکشمیر کی ترقی اور مقبوضہ کشمیر کی غاصب ہندوستان سے آزادی میری اولین تر جیح اورسوچ ہے ،آزادکشمیر کے غیور اور محنت کش عوام سے خطاب میرے لئے باعث فخر وخوشی ہے کھل کر بات کروں گا کہ نام نہاد پاکستانی لیڈروں نے پاکستان اور کشمیر کاز کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے ، پاکستانی حکمرانوں اور سیاسی قیادت کی خاموشی کی وجہ سے کشمیریوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں ،2005ء کے زلزلہ میں دنیا کے 76 ممالک سے مدد مانگی جنہوں نے اعتماد کرتے ہوئے 6.4ارب ڈالر بطور امداد ہمیں د ئیے ، ان خیالا ت کا اظہار جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف نے آل مسلم لیگ آزادکشمیر اپراڈا چوک شہیداں میں منعقدہ جلسہ عام سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔