کتاب کی رونمائی سے قبل ریحام خان کی بیٹی کی متنازعہ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل – نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا

کتاب کی رونمائی سے قبل ریحام خان کی بیٹی کی متنازعہ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل - نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا
لاہور(ویب ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی)چیئرمین عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کی کتاب کی اشاعت کا اعلان ہوتے ہی سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہو گیا ہے اور سوشل میڈیا صارفین کی توپوں کا رخ ریحام خان کی جانب ہو چکا ہے۔اداکار حمزہ علی عباسی نے ریحام خان کی کتاب میں لکھے گئے ممکنہ مواد کے حوالے سے کئی دعوے کےا،
جس کے بعد سوشل میڈیا پر ہر کوئی اس بحث میں حصہ لے رہا ہے اور مختلف دعوے و انکشافات سامنے آ رہے ہیں اور اب ریحام خان کی بیٹی کی چند ”قابل اعتراض“ تصاویر بھی منظرعام پر آ گئی ہے جس کے باعث سوشل میڈیا پر بھونچال آ گیا ہے۔سوشل میڈیا پر سامنے آنے ریحام خان کی بیٹی ردا کی یہ تصاویر غیر ملکی دوستوں کے ساتھ ہیں جن میں انہیں ’فن ٹائم‘ گزارتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ایک صارف نے یہ تصاویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ”یہ ریحام کی بیٹی ردا ایک ہم جنس پرست ہے کچھ لوگ اسے ریحام خان کے پہلے شوہر جو کہ ڈاکٹر ہیں ان کی بیٹی مانتے ہیں جبکہ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ ریحام اور ان کے کزن شعیب کے پیار کی نشانی ہے“۔یہ ریحام کی بیٹی ردا ایک لاسبین ے اور سننے میں آیا ہے کہ یہ کاسٹنگ کوچ ویڈیوز میں بھی کام کر چکی ہیں(کنفرم نہیں)یہ تصاویر سامنے آنے کے بعد ہر کوئی تبصرے کرنے میں مصروف ہے ،جبکہ زیادہ تر افراد کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ ریحام خان کا ہے اس لئے ان کی بیٹیاس کی ذاتی زندگی کو نشانہ بنانا غیر اخلاقی ہے اور ایسا کرنے والے افراد کی حوصلہ شکنی کرنی چاہئے۔عرفان چوہدری نامی صارف نے لکھا ”میرے خیال سے بچوں کو اس لڑائی سے باہر رکھنا ہے۔ وہ بالغ نہیں ہے اور اس سب کیساتھ اس کا کچھ لینا دینا نہیں ہے“۔عدنان نے لکھا ”میرا ماننا ہے کہ ہمیں یہ جنگ ریحام خان کیخلاف لڑنی چاہئے۔ تمہیں نہیں لگتا ہے کہ ہم حد پار کر رہے ہیں۔۔۔ اللہ کو بھی یہ ناپسند ہے۔۔۔ اللہ پاک کا حکم ہے کہ پردہ نہ اٹھاﺅ کسی کی ذاتی زندگی سے۔۔۔ اس لڑائی کو ریحام بے شرم تک محدود رکھیں۔۔۔ شکریہ بھائی،ابو عبداللہ نے لکھا ”چُنی اکھاں والی“ایک پاکستانی نامی ٹوئٹر ہینڈل نے لکھا ”خان صاحب سے محبت عقیدت اپنی جگہ لیکن یقینا خان صاحب بھی کبھی اپنے دشمن کی بیٹی پر کیچڑ نہیں اچھالیں گے۔۔۔ تو بھائی بچوں خاص طور پر بیٹیوں کو اس سے باہر رکھیں شکریہ ہم اس رسولﷺ کے امتی ہیں جنہوں نے پتھر مارنے والوں کو بھی دعا دی“۔